Pages

Subscribe:

Friday, 18 May 2012

زندگی کو نہ بنا لیں وہ سزا میرے بعد

زندگی کو نہ بنا لیں وہ سزا میرے بعد
حوصلہ دینا اُنہیں میرے خدا میرے بعد

ہاتھ اُٹھتے ھوئے اُن کے نہ کوئی دیکھے گا
کس کے آنے کی کریں گے وہ دُعا میرے بعد

کون گھونگھٹ کو اُٹھا ئے گا ستم گر کہ کر
اور پھر کس سے کریں گے وہ حیاء میرے بعد

پھر زمانے میںمحبت کی نہ پُر سش ھو گی
روئے گی سسکیاں لے کے وفا میرے بعد

وہ جو کہتا تھا کہ ناصر کہ لیے جیتا ھوں
اُس کا کیا جانیے کیا حال ھوا میرے بعد

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

نوٹ:- اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔