Pages

Subscribe:

Monday, 21 May 2012

بہار رَت میں اجاڑ راستے

بہار رُت میں اجاڑ راستے ،
تکا کرو گے تو رو پڑو گے …

کسی سے ملنے کو جب بھی محسن ،
سجا کرو گے تو رو پڑو گے … .

تمھارے وعدوں نے یار مجھ کو ،
تباہ کیا ہے کچھ اس طرح سے …

کے زندگی میں جو پھر کسی سے ،
دغا کرو گے تو رو پڑو گے …

میں جانتا ہوں میری محبت ،
اجاڑ دے گی تمہیں بھی ایسی …

کے چاند راتوں میں اب کسی سے ،
ملا کرو گے تو رو پڑو گے …

برستی بارش میں یاد رکھنا ،
تمہیں ستائیں گی میری آنکھیں …

کسی ولی کے مزار پر جب
دعا کرو گے تو رو پڑو گے . . . !

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

نوٹ:- اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔