Pages

Subscribe:

Friday, 18 May 2012

تم دوسری ہو

سنا ہے
زمین پر وہی لوگ ملتے ہیں …
جن کو
کبھی آسمانوں کے اس پار
راہوں کے میلے میں
ایک دوسرے کی محبت ملی ہو
مگر تم . . .
کے میرے لیے نفرتوں کے اندھیرے میں
ہنستی ہوئی روشنی ہو
لہو میں رچی
رگوں میں بسی ہو
ہمیشہ سکوت شب غم میں آواز جان بن کے
چاروں طرف گونجتی ہو
اگر آسمان کے اس پار
راہوں کے میلے میں بھی مل چکی ہو
تو پھر اس زمین پر
میری چاہتوں کے کھلے موسموں سے گریزاں
میری دھوپ چھاؤں سے
کیوں اجنبی ہو . . ؟ ؟ ؟
کتابوں میں لکھی ہوئی
اور کانوں سنی
ساری باتیں غلط ہیں . . . ؟ ؟ ؟
کے تم دوسری ہو . . . ؟ ؟

0 comments:

آپ بھی اپنا تبصرہ تحریر کریں

اہم اطلاع :- غیر متعلق,غیر اخلاقی اور ذاتیات پر مبنی تبصرہ سے پرہیز کیجئے, مصنف ایسا تبصرہ حذف کرنے کا حق رکھتا ہے نیز مصنف کا مبصر کی رائے سے متفق ہونا ضروری نہیں۔

نوٹ:- اگر آپ کے کمپوٹر میں اردو کی بورڈ انسٹال نہیں ہے تو اردو میں تبصرہ کرنے کے لیے ذیل کے اردو ایڈیٹر میں تبصرہ لکھ کر اسے تبصروں کے خانے میں کاپی پیسٹ کرکے شائع کردیں۔